Home / کھیل / ثانیہ مرزا نے اپنا وزن کیسے کم کیا جانیں

ثانیہ مرزا نے اپنا وزن کیسے کم کیا جانیں

معروف بھارتی ٹینس اسٹار ثانیہ مرزا اسپورٹس پرسن ہونےکے باعث اپنی فٹنس کا بہت خیال رکھتی ہیں۔ ان

کےبیٹے ازہان مرزا ملک کی پیدائش کے بعد ثانیہ نے جسمانی وزن میں کمی کے سفر کے بارے میں سماجی رابطے کی ویب سائٹ انسٹاگرام پر

پوسٹ کے ذریعے اپنی فٹنس کا راز بتایا۔ انسٹاگرام پر شیئر کردہ ایک ویڈیو میں انہوں نے انکشاف کیا تھا کہ ‘ہر کوئی مجھ سے یہ سوالات پوچھ رہا ہے

کہ بچے کی پیدائش کے بعد میں نے وزن کم کیسے کیا؟ انہوں نے بتایا کہ حاملہ ہونے کے دوران میں نے 23 کلو وزن بڑھا

لیا تھا، اور اب میں 26 کلو وزن گھٹا چکی ہوں۔ آل راؤنڈر شعیب ملک کی اہلیہ ثانیہ مرزا نے پوسٹ میں لکھا تھا کہ اگر ہر

روز ہم خود کو ایک یا دو گھنٹے دیں اور ورزش کریں تو یقیناً بہت مثبت فرق آئے گا’۔ ثانیہ نے اپنی ایک پوسٹ میں لکھا کہ میں ہر روز خواتین کی جانب سے بھیجے جانے والے ایسے پیغامات پڑھتی ہوں جو بتاتی ہیں کہ اولاد کی پیدائش کے بعد ان کے لیے وزن کم کرنا بےحد مشکل ہے، میں ان سے بس یہی کہنا چاہتی ہوں کہ اگر میں کرسکتی ہوں تو آپ بھی کرسکتی ہیں۔ واضح رہے کہ ثانیہ مرزا کے بیٹے کی پیدائش اکتوبر 2018 میں ہوئی تھی، جس کے 2 ماہ بعد سے انہوں نے وزن کم کرنے کی کوششیں شروع کردی تھیں۔ بھارتی ٹینس اسٹار ثانیہ مرزا نے اپنی ایک پوسٹ میں وزن کم کرنے کا حل بتا دیا۔

انسٹاگرام پر ثانیہ مرزا نے اپنے بڑھے ہوئے وزن کے حوالے سے ایک تصویر پوسٹ کرکے لکھا کہ 89 کلو بمقابلہ 63 کلو۔انہوں نے لکھا کہ ہم سب کے ہی کچھ اہداف ہوتے ہیں، اپنے تمام اہداف کو اپنا سو فیصد دیں اور پھر نتائج دیکھیں ۔ ثانیہ نے بتایا کہ انہوں نے بچے کی پیدائش کے بعد 4 ماہ میں 26 کلو وزن کم کیا ۔ انہوں نے مداحوں کو پیغام دیا کہ اپنے خوابوں کی پیروی کریں، خدا جانتا ہے کہ آپ کی حوصلہ شکنی کے لیے آپ کے ارد گرد کتنے لوگ موجود ہیں لیکن آپ کو ان سے کوئی فرق نہیں پڑنا چاہئے۔ یاد رہے کہ پاکستان کرکٹ ٹیم کے سابق کپتان شعیب ملک اور ٹینس اسٹار ثانیہ مرزا 12 اپریل 2010 کو شادی کے بندھن میں بندھے تھے۔

About admin

Check Also

پاکستان کی افغانستان سے شکست پر رمیز راجہ کا ردعمل آ گیا

سابق چیئرمین پاکستان کرکٹ بورڈ (پی سی بی) رمیز راجا نے افغانستان سے شکست پر …

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Powered by themekiller.com